07-07-2017

پشاور ہائی کورٹ نے صوبے کے آٹھ بڑے ترقیاتی منصوبوں کے ٹھیکے این ایل سی کو دینے کے خلاف دائر آئینی درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا ہے ۔

 چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی کی سربراہی میں قائم دو رکنی بنچ نے کنٹریکٹرز ایسوسی ایشن خیبر پختونخوا کی جانب سے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی ۔

 دوران سماعت درخواست گزار کے وکلاء نے دائر رٹ پردلائل مکمل کئے ۔ اس موقع پر ایڈوکیٹ جنرل خیبر پختونخوا عبد الطیف یوسفزئی نے موقف اپنایا کہ این ایل سی کو دیئے جانے والے آٹھ ترقیاتی منصوبوں پر نظر ثانی کی جائے گی اور کابینہ سے اس کی باقاعدہ منظٔری لینے سمیت اس حوالے سے تمام ضابطے پورے کئے جائیں گے ۔

فاضل عدالت نے رٹ درخواست پر دلائل مکمل ہونے پر رٹ درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا ۔