14-09-2017

پشاور میں دفعہ ایک سو چوالیس نافذ کر دی گئی ہے ۔

ڈپٹی کمشنر پشاور کی جانب سے جاری ہونے والے ایک اعلامیہ کے مطابق ضلع پشاور میں دفعہ ایک چوالیس نافذ کر دی گئی ہے جس کے تحت اسلحہ کی نمائش ، اسلحہ لیکر چلنے ، سیاہ شیشوں والی گاڑیوں ، غیر رجسٹرڈ اور جعلی نمبر پلیٹ والی گاڑیوں کے یونیورسٹی کیمپس کی حدود میں داخل ہونے پر پابندی عائد کر دی گئی ہے ۔

اسی طرح ضابطہ فوجداری کے دفعہ ایک سو چوالیس کے تحت ضلع پشاور کی حدود میں دیواروں پر لکھائی کرنے ، قابل اعتراض پمفلٹس کی تقسیم ، مساجد اور امام بارگاہوں پر پوسٹرز چسپاں کرنے اور دیگر تمام قسم کے قابل اعتراض مواد کی چھپائی و تقسیم پر پابندی ہوگی ۔

حکمنامہ میں کہا گیا ہے کہ ضلع پشاور میں اسلحہ و گولہ بارود کے کارخانوں او ر اسلحے کا کاروبار کرنے والی دکانیں آٹھ ، نو اور دس محرم الحرام کو تین روز کےلئے بند کر دی جائیں جبکہ پشاور شہر اور کینٹ کے علاقوں میں عرصہ دس روز کےلئے یعنی یکم تا دس محرم افغان مہاجرین کے داخلہ پر پابندی عائد ہو گی ۔

اسی طرح ڈپٹی کمشنر پشاور کے اعلامیہ کے مطابق ضلع پشاور اور کینٹ کے علاقوں میں ہوٹلوں اور سرائے کھلی رکھنے پر پابندی ہوگی اور یہ حکم نامہ ساتویں محرم سے دسویں محرم تک چار دنوں کےلئے نافذ العمل ہوگا اور اس دوران اذان اور خطبہ جمعہ کے علاوہ لاوڈ سپیکر کے استعمال کو ممنوع قرار دیا گیا ہے