17-05-2017

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحی آفریدی اورجسٹس محمد ایوب پر مشتمل دو رکنی بنچ نے پشاور کے نواحی علاقہ کنکوکہ میں چھبیس اپریل دو ہزار پندرہ کے شدید طوفان کے باعث جاں بحق ہونے والے افراد کے لواحقین کو تاحال مالی معاوضہ ادا نہ کرنے پر ڈپٹی کمشنر پشاور سے جواب طلب کرلیا ہے ۔

دریں اثناء فاضل عدالت نے سترہ اگست دو ہزار سولہ کو تھانہ کالو خان کی حدود میں ہونے والے پولیس مقابلہ سے متعلق جے آئی ٹی کی رپورٹ طلب کر لی ہے یہ احکامات سابق ایس ایچ او تھانہ کالوخان کی جانب سے دائر رٹ پر جاری کئے جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ پولیس مقابلہ میں جاں بحق ہونے والے شبیر حسین کی والدہ نے بائیس اے کی درخواست عدالت میں دائر کی تھی اور عدالت نے ایس ایچ او کے خلاف ایف آئی آرکے اندراج کا حکم دیا تھا جس پر فاضل عدالت عالیہ حکم امتناعی جاری کر چکی ہے تاہم آئی جی پی کو انکوائری کی درخواست پرجے آئی ٹی کو انکوائری کا حکم دیا گیا تھا لہذا فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ جے آئی ٹی کی رپورٹ عدالت میں پیش کی جائے ۔