30-03-2018

پشاورہائی کورٹ نے میڈیکل کالج کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں ملوث ملزمان کی درخواست ضمانت اورمقدمات سماعت کے لئے کوہاٹ سے پشاورمنتقل کرنے کے لئے دائررٹ درخواست  پرملزمان اورصوبائی حکومت کونوٹس جاری کردیا ہے۔

 چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس  یحیی آفریدی پر مشتمل فاضل بنچ دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذارعرفان کی بہن عاصمہ رانی کوہاٹ میں میڈیکل کالج کی طالبہ تھی جن کو قتل کیا گیا تھا اور مقتولہ نے بیان نزع میں مجاہد آفریدی پردعویداری کی تھی، عدالت کو بتایا گیا کہ پولیس نے ملزمان مجاہد آفریدی اورشاہ زیب کے خلاف مقدمہ درج کرکے انہیں گرفتارکرلیاگیاہے جن کے خلاف مقدمے میں اب دہشت گردی کی دفعات بھی شامل کردی گئی ہیں جبکہ ملزمان نے ضمانت پررہائی کے لئے کوہاٹ کی خصوصی عدالت میں درخواست دائرکی ہے، تاہم ملزمان بااثر ہیں اور انہیں ہراساں کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ لہذا ملزمان کی درخواست ضمانت اورمقدمہ قتل سماعت کے لئے پشاورکی عدالت کو منتقل کیاجائے۔