19-01-2017

پشاور ہائی کورٹ نے اینٹی کرپشن اسٹبلیشمنٹ کو عام شہری کی گرفتاری سے روکتے ہوئے جواب طلب کرلیا ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اور جسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے درخواست گزار خرم منظور حیات کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ اس کا اپنے بزنس پارٹنر سے سی این جی سٹیشن کے اضافی رقم کی ادائیگی سے متعلق سول کور ٹ میں مقدمہ زیر سماعت ہے تاہم اس کے پارٹنر نے انٹی کرپشن میں درخواست دی ہے جو کہ غیر قانونی ہے اور اس خدشہ ہے کہ اسے گرفتار کر لیا جائے گا ۔

عدالت نے اینٹی کرپشن کو عام شہری کی گرفتاری سے روکتے ہوئے اس ضمن میں جواب طلب کرلیا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔