June 20, 2019

Khyber Pakhtunkhwa Judicial Academy, Peshawar
BROADCAST TIMING

Morning : 08:00AM to 11:00AM | Evening : 03:00PM to 07:00PM
Call Now: 091-9211654 | Email us: info@radiomeezan.pk

عبد الولی خان یونیورسٹی مردان کے دو افسران کی ضمانت پر رہائی کے احکامات جاری

10-01-2019

پشاور ہائی کور ٹ نے نیب کے ہاتھوں گرفتار عبد الولی خان یونیورسٹی مردان کے پرکیورمنٹ آفیسر پیر اسفندیار اور اکاونٹ آفیسر شفیق اللہ کی ضمانت پر رہائی کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

جسٹس اکرام اللہ اور جسٹس مسرت ہلالی پر مشتمل پشاور ہائی کورٹ کے دورکنی بنچ نے دائر ضمانت درخواستوں کی سماعت جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزاروں پر عبد الولی خان یونیورسٹی مردان کےلئے مختلف اشیاء کی خریداری میں بے قاعدگیوں کا الزام ہے اور انہیں چھ ماہ قبل نیب نے گرفتار کیا ہے تاہم ملزمان نہ تو پریکیورمنٹ کمیٹی کے ممبران ہیں اور نہ ہی انہیں کسی طور پر اس میں کو ئی رول دیا گیا ہے جبکہ احتساب عدالت درخواست گزاروں کے خلاف ریفرنس واپس کر چکی ہے اس لئے جب ایک کیس کا ریفرنس ہی نہیں تو ملزمان کی گرفتاری کا کیا جواز بنتا ہے ۔ دائر درخواستوں میں موقف اپنایا گیا کہ سپریم کورٹ اور پشاور ہائی کورٹ اس حوالے سے متعدد فیصلے دے چکی ہے جس میں قرار دیا گیا ہے کہ ایک ملزم کے خلاف اس کی گرفتاری کے دوران ان پر عائد تمام الزامات کی ایک ساتھ انکوائری کی جائے گی اور ایک ہی ریفرنس دائر ہوگا لیکن درخواست گزاروں کے خلاف ہر الزام کے تحت مختلف ریفرنسز دائر کئےگئے ہیں جس میں وہ ضمانت پر ہیں لیکن پریکیورمنٹ کے حوالے سے بے قاعدگیوں پر اسے گرفتار کیا گیا ہے۔لہذا درخواست گزار ملزمان کو ضمانت پر رہا کیا جائے ۔

Related posts