07-03-2017

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے غیرضروری نظر ثانی درخواستوں پر جرمانے عائد کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔

سپریم کورٹ میں مختلف مقدمات کی سماعت کے دوران چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے غیرضروری نظرثانی درخواستوں پر برہمی کا اظہار کیا اور ریمارکس دیئے کہ ہم زیر التوا مقدمات نمٹانا چاہتے ہیں، پہلے ہی نظرثانی درخواستیں کیا کم ہیں کہ اب ہردوسرے مقدمے میں اس قسم کی درخواستیں دائرکردی جاتی ہیں۔

چیف جسٹس پاکستان کا کہنا تھا کہ ہم ابھی احتیاط برت رہے ہیں اور جرمانے نہیں کررہے لیکن مستقبل میں غیرضروری نظر ثانی درخواستوں پر جرمانہ بھی ہوسکتا ہے۔

واضح رہے کہ چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثارنے جب اپنے عہدے کا حلف اٹھایا تھا تو سب سے پہلے انہوں نے وکلا کی جانب سے مقدمات کے التوا سمیت دیگرغیر ضروری  درخواستوں کے سد باب پر زور دیا تھا۔