08-05-2017

سپریم کورٹ نے پاکستان تحریک انصاف کے چیرمین عمران خان سے ان کی تمام آف شورکمپنیوں کی مکمل تفصیلات طلب کرلی ہیں۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے عمران خان اور جہانگیر ترین کی نااہلی کے لیے حنیف عباسی کی درخواستوں کی سماعت کی۔

 دوران سماعت چیف جسٹس  پاکستان نے کہا کہ عام آدمی کو ٹیکس معاملات کا علم نہیں ہوتا، زیادہ تر لوگ اکاؤنٹنٹ اور کنسلٹنٹ کے کہنے پر ہی چلتے ہیں، یہ معاملہ بھی آسانی سے حل ہوسکتا ہے، عمران خان سے حلف نامہ لے سکتے ہیں کہ نیازی سروسز کا فلیٹ کے علاوہ کوئی اثاثہ نہیں تھا،آپ ایک ممبر قومی اسمبلی کی ڈس کوالیفکیشن مانگ رہے ہیں، صرف فرضی باتوں پر کسی کو نااہل نہیں کرسکتے، صادق اورامین نہ ہونا ساری عمر کا دھبہ ہے، ٹھوس شواہد کے بغیر کسی کو کیسے ڈکلیئر کریں کہ وہ صادق اورامین نہیں ہے۔