16-03-2017

سپریم کورٹ نے غیر معیاری اور غیر رجسٹرڈ اسٹنٹس کیس میں حکومت سے مقامی طور پر تیار ہونے والے اسٹنٹس سے متعلق تفصیلات طلب کرلیں ہیں۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں قائم سپریم کور ٹ کے تین رکنی بنچ نےغیر معیاری اور غیر رجسٹرڈ اسٹنٹ سے متعلق از خود نوٹس کیس کی سماعت ۔

 سماعت کے دوران عدالت نے حکومت سے مقامی سطح پر تیار ہونے والے اسٹنٹس سے متعلق تفصیلات طلب کرلیں جبکہ حکومتی وکیل نے عدالت کو بتایا کہ اسٹنٹس میں استعمال ہونے والی ڈیوائسز کو رجسٹرڈ کرنے کے لیے قوانین نرم کردیئے ہیں۔

چیف جسٹس پاکستان نے ریمارکس دیئے کہ جب تک کوئی بھی معاملہ عدالت میں نہیں آتا ریاست اپنی ذمہ داری نہیں لیتی، مریض کوغیرمعیاری اور غیر رجسٹرڈ اسٹنٹ نہ ڈالا جائے، صحت کے معاملے پر حکومتی کوتا ہی برداشت نہیں کریں گے اور عدالت اپنی ہرذمہ داری پوری کرے گی جبکہ ادویات کی قیمتوں کا بھی جائزہ لیں گے۔

 عدالت نے از خود نوٹس  کیس کی سماعت اپریل کے آخری ہفتے تک ملتوی کردی۔