16-02-2017

پشاور ہائی کورٹ نے متاثرین کے فنڈز میں خود برد اور غیر قانونی اثاثے بنانے کے الزام میں گرفتار سابق ڈی جی ایف ڈی ایم اے  کو ضمانت پر رہا کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں ۔

جسٹس روح الاآمین خان اور جسٹس لعل جان خٹک پر مشتمل دو رکنی بنچ نے سابق ڈائریکٹر جنرل فاٹا ڈیزاسٹر منجمنٹ اتھارٹی ارشد خان کی جانب سے دائر ضمانت درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ نیب خیبر پختونخوا نے درخواست گزار کو دہشت گردی کے خلاف جنگ کے دوران بے گھر ہونے والے قبائلیوں کےلئے مختص فنڈز میں خورد برد کرنے اور غیر قانونی اثاثے بنانے کے الزام میں گرفتار کیا ۔ جبکہ اب تک درخواست گزار کے خلاف عائد الزامات میں کوئی ٹھوس ثبوت پیش نہیں کیا گیا ہے لہذا اسے ضمانت پر رہا کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں ۔

عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر سابق ڈی جی ایف ڈی ایم اے کو ضمانت پر رہا کرنے کے احکامات جاری کردیئے ۔