08-06-2018

سپریم کورٹ نے قرض معاف کروانے والی دو سو بائیس کمپنیوں سے ایک ہفتے میں جواب طلب کرلیا ہے ۔

چیف جسٹس پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار ک کی سربراہی میں سپریم کورٹ بنچ نے  54 ارب روپےکےقرضوں سےمتعلق ازخودنوٹس  کیس کی سماعت کی ۔فاضل عدالت نے  قرضے معاف کرانے والی دو سو بائیس کمپنیوں سےایک ہفتےمیں تفصیلی جواب طلب کرلیا۔دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے قوم کے پیسے واپس نہ کیے تو معاملہ نیب کے حوالے کردیں گے اور نادہندگان کی جائیدادیں بھی ضبط کرلی جائیں گی۔

عدالت نے فریقین  سے انیس جون تک جواب طلب کرتے ہوئے سماعت ملتوی کردی۔