17-04-2017

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پشاور نے قیدی کا ہسپتال میں علاج نہ ہونے پر جوڈیشل مجسٹریٹ پشاور کو تحقیقات مکمل کرکے ایک ہفتے کے اندر رپورٹ پیش کرنے کے احکامات جاری کردیئے ۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پشاور نے جوڈیشل مجسٹریٹ پشاور محمد آصف جدون کو ہدایت کی ہے کہ وہ علاج کےلئے مجرم قیدی رضوان کو کئی مرتبہ ایل آر ایچ کی سرجیکل او پی ڈی بھیجے جانے کے باوجود وہاں پر اس کا علاج معالجہ نہ کرنے سے متعلق معاملے کی تحقیقات کریں اور اس سلسلے میں متعلقہ اہلکاروں کی غفلت اور ذمہ داروں کے خلاف قانونی کاروائی کےلئے ذمہ داری کا تعین کرکے مکمل رپورٹ ایک ہفتے کے اندر پیش کریں ۔سینئر میڈیکل آفیسر سنٹرل جیل پشاور کی رپورٹ کے مطابق قیدی رضوان کو علاج کےلئے بنوں جیل سے سنٹرل جیل پشاور منتقل کیا گیا جس کے بعد اسے ایل آر ایچ کی سرجیکل او پی ڈی میں کئی مرتبہ علاج کےلئے بھیجا گیا لیکن مبینہ طور پر ان کا علاج نہیں کیا گیا۔