10-04-2017

چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس سید منصور علی شاہ نے ممبر انسپکشن ٹیم کا عہدہ ختم کرتے ہوئے ضلعی عدلیہ کی مانیٹرنگ کےلئے ڈائریکٹوریٹ بنانے کا فیصلہ کر لیا ہے جس کا سربراہ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج ہوگا جبکہ سات ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج بطور ایڈیشنل رجسٹرار ڈائریکٹوریٹ ، ایک سینئر سول جج بطور ڈپٹی رجسٹرار جبکہ سات سول ججز بطور اسسٹنٹ رجسٹرار کے طور پر فرائض سرانجام دیں گے ۔

اس ادارے کا کام پنجاب کی ماتحت عدلیہ کے ججز کی کارکردگی اور ان کے خلاف شکایات کو موثر طریقے سے نمٹانے سمیت دیگر امور کی انجام دہی ہوگی ۔

واضح رہے کہ پنجاب کی ضلعی عدلیہ پر کڑی نظر رکھنے کےلئے لاہور ہائی کورٹ میں بیس برس قبل ایم آئی ٹی کا شعبہ وجود میں لایا گیا تھا جس کا کام پنجاب کی ماتحت عدلیہ کے ججز کے خلاف آنے والی شکایات سمیت دیگر امور کو دیکھنا تھا تاہم چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ نے اس عہدے کو ختم کرنے کا فیصلہ ہے اور اس عہدے کی جگہ ڈائریکٹوریٹ آف ڈسٹرکٹ جوڈیشری کا قیام عمل میں لانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔