30-08-2017

پشاور ہائی کورٹ نے لیڈی ریڈنگ ہسپتال پشاور میں تعینات کنٹریکٹ ڈاکٹروں کو مستقل کرنے کے احکامات جاری کر دیئے ہیں ۔

جسٹس غضنفر علی اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل پشاور ہائی کورٹ کے دو رکنی بنچ نے ڈاکٹر آصف اقبال سمیت دس ڈاکٹروں کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزاروں کی مستقل بنیادوں پر اسسٹنٹ پروفیسرز کی حیثیت سے تقرری ہوئی اور بعد میں جب انہیں تقرر نامہ موصول ہوا تو اس پر کنسلٹنٹ اسسٹنٹ پروفیسر درج تھا اور وہ بھی کنٹریکٹ بنیادوں پر حالانکہ ان پوسٹوں کےلئے دیئے جانے والے اشتہار میں یہ پوسٹیں مستقل ظاہر کی گئی تھیں لہذا ان کے تقررنامے مستقل بنیادوں پر کئے جائیں اور تقرر ناموں سے کنسلٹنٹ کے الفاظ  ختم کئے جائیں ۔

عدالت نے دلائل مکمل ہونے پر تقرر ناموں کو اشتہار کے مطابق کرنے کے احکامات جاری کردیئے ۔