25-04-2017

سپریم کورٹ نے وفاق، پنجاب اور خیبرپختونخوا حکومتوں  سے مارگلہ کی پہاڑیوں اور درختوں کی کٹائی کے ذمہ داران کی فہرستیں طلب کر  لی ہیں اور قرار دیا ہے کہ بتایا جائے کہ مارگلہ کی پہاڑیوں کے تحفظ کیلئے کیا اقدامات اٹھائے گئے جبکہ مافیا اور غفلت کے مرتکب افسران کیخلاف کیا کارروائی ہوئی ۔

جسٹس عظمت سعید شیخ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے  تین رکنی بینچ نے مارگلہ کی پہاڑیوں اور درختوں کی کٹائی سے متعلق از خود نوٹس کیس کی سماعت کی ۔

جسٹس عظمت سعید شیخ نے ریمارکس دیئے کہ وفاقی حکومت ، خیبر پختونخوا اور پنجاب حکومتوں نے کسی بھی ذمہ دار کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کی ، تینوں حکومتیں کہہ دیں کہ وہ بے بس ہیں قانون پر عمل درآمد نہیں کروا سکتیں ، کسی حکومت نے بھی مارگلہ کے تحفظ کے ذمہ داران افسران کی ناکامی پر کوئی ایکشن نہیں لیا ۔ عدالت نے قرار دیا کہ تینوں حکومتیں مارگلہ کی پہاڑیوں اور درختوں کی کٹائی کے ذمہ داران کی فہرستیں دیں اور بتایا جائے کہ مارگلہ کی پہاڑیوں کے تحفظ کیلئے کیا اقدامات اٹھائے گئے ، مافیا اور غفلت کے مرتکب افسران کیخلاف کیا کارروائی ہوئی ، عدالت نے کیس کی سماعت ایک ہفتے کیلئے ملتوی کر دی۔