17-04-2017

پشاور ہائی کورٹ نے عدالتی احکامات کے باوجود محکمہ ایریگیشن کے ایکسیئن کو بعد از ریٹائرمنٹ ترقی نہ دینے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی حکومت کو ایک ہفتے کی مہلت دے دی ۔

دائرتوہین عدالت درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ عدالت نے درخواست گزار کودائر رٹ پٹیشن پر بعد از ریٹائرمنٹ ترقی دینے کے احکامات جاری کئے تھےتایم عدالتی احکامات پر عمل درآمد نہیں کیا جا رہا ہے جو توہین عدالت کے زمرے میں آتا ہے لہذا عدالتی احکامات پر عمل درآمد یقینی بنایا جائے ۔

عدالت نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے صوبائی حکومت کو عدالتی احکامات پر ایک ہفتے کی مہلت دیتے ہوئے کہا کہ عدالتی احکامات کی تعمیل نہ کرنے پر متعلقہ حکام پر توہین عدالت کیس میں فرد جرم عائد کی جائے گی ۔