13-09-2017

پشاور ہائی کورٹ نے خاتون کو محکمہ جنگلات میں میرٹ پر آنے کے باوجود ملازمت نہ دینے پر چیف کنزرویٹر خیبر پختونخوا کو نوٹس جاری کرتے ہوئے عدالت طلب کر لیا ہے ۔

جسٹس روح الاآمین خان اور جسٹس یونس تہیم پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا کہ محکمہ جنگلات میں خواتین فارسٹر  کےلئے اشتہار جاری کیا گیا جس میں درخواست گزارہ نے بھی درخواست دی اور میرٹ پر پورا اترنے کےباوجود ان کی تقرری نہیں کی گئی لہذا ان کی تقرری کے احکامات جاری کئے جائیں ۔

عدالت نے ابتدائی سماعت کے بعد چیف کنزرویٹو جنگلات کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیا ۔