05-05-2017

پشاور ہائی کورٹ نے خیبر پختونخوا احتساب کمیشن کو محکمہ سماجی بہبود میں غیر قانونی بھرتیوں اور فنڈز کے غلط استعمال کے الزامات میں ملوث سابق ڈائریکٹر امتیاز ایوب کی گرفتاری روک دی اور ان کی عبوری ضمانت کی توثیق کر دی ہے ۔

دائر درخواست میں فاضل عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزار گریڈ انیس کے  سابق ڈائریکٹر سوشل ویلفیئر ڈیپارٹمنٹ ہیں جنہیں صوبائی احتساب کمیشن نے دو ہزار پندرہ میں گرفتار کیا تھا اور ان پر غیر قانونی بھرتیوں اور فنڈز کے غلط استعمال کا الزام عائد کیا گیا تھا اور پشاور ہائی کورٹ نے اسے دو جولائی دو ہزار پندرہ کو عبوری ضمانت پر رہا کیا تھا اب چونکہ اس کے خلاف ریفرنس تیار کرکے احتساب کمیشن کی خصوصی عدالت میں دائر کر دیا گیا ہے جبکہ درخواست گزار سے تفتیش بھی مکمل ہو چکی ہے لہذا اب صوبائی احتساب کمیشن کے پاس درخواست گزار کی گرفتاری کا کوئی جواز نہیں لہذا ان کی ضمانت درخواست کی توثیق کی جائے ۔