21-09-2017

پشاور ہائی کورٹ کے احکامات پر محکمہ پولیس میں آٹھ اسسٹنٹ سب انسپکٹروں کو بھرتی کے تقررنامے عدالت میں پیش کر دیئے گئے جس پر عدالت نے ان کی بھرتی کےلئے دائر رٹ درخواست نمٹا دی ۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بنچ نے عدالتی احکامات کے باوجود محکمہ پولیس میں اے ایس آئی بھرتی نہ کرنے پر آئی جی پولیس اور ہوم سیکرٹری کے خلاف دائر توہین عدالت کی درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزاروں کو اے ایس آئی بھرتی کرنے کے احکامات جاری کئے گئے تھے تاہم عدالتی احکامات پر عمل درآّمد نہیں کیا جا رہا ہے جس پر عدالت نے پولیس حکام کو حکم دیا کہ درخواست گزاروں کے تقررنامے عدالت میں پیش کئے جائیں بصورت دیگر توہین عدالت کی کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔سماعت کےد وران محکمہ پولیس کے متعلقہ حکام نے درخواست گزاروں کے تقررنامے عدالت میں پیش کئے جس پر توہین عدالت کی درخواست نمٹا دی گئی ۔