16-08-2017

پشاور ہائی کورٹ نے حالیہ مردم شماری میں جنوبی وزیر ستان سے بے گھر ہونے والے محسود قبائل کو ایجنسی ہی کے رہائشی قرار دینے کےلئے دائر رٹ درخواست پر محکمہ شماریات ، نادرا اور ایڈیشنل چیف سیکرٹری فاٹا سے ریکارڈ طلب کرلیا ہے۔

جسٹس اکرام اللہ خان اور جسٹس عبد الشکور پر مشتمل دو رکنی بنچ نے محسود ویلفیئر ایسوسی ایشن کے صدر رحمت خان محسود کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں موقف اپنایا گیا کہ محسود قبائل وزیر ستان میں جاری دہشت گردوں کے خلاف آپریشن کےد وران ملک کے مختلف حصوں میں  پھیلے ہوئے ہیں اور حالیہ مردم شماری میں نوے فیصد تک قبائلی اپنے آبائی علاقوں میں نہیں تھے لہذا انہیں اپنے علاقوں کا رہائشی قرار دیا جائے ۔