10-08-2017

اسلام آباد ہائی کورٹ نے مسلم لیگ (ن) پر پابندی اور رجسٹریشن منسوخ کرنے کی درخواست قابل سماعت ہونے سے متعلق فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق پر مشتمل بنچ  نے پاکستان عوامی تحریک کی جانب سے مسلم لیگ (ن) پر پابندی اور رجسٹریشن منسوخ کرنے کی درخواست پر سماعت ہوئی جس میں موقف اپنایا گیا کہ سپریم کورٹ نے نواز شریف کو نااہل قرار دیا لہذا وہ اب پارٹی امور نہیں چلا سکتے، مسلم لیگ (ن) نااہل قرار دیے گئے شخص نواز شریف کے نام پر ہے لہذا ہماری استدعا ہے کہ مسلم لیگ (ن) کی الیکشن کمیشن میں رجسٹریشن منسوخ کی جائے۔

جسٹس عامر فاروق نے ریمارکس دیے کہ الیکشن کمیشن نے خود کہہ دیا ہے کہ نااہل شخص پارٹی کی قیادت نہیں کر سکتا جبکہ پریس میں آیا ہے کہ الیکشن کمیشن نے پارٹی کا نیا سربراہ مقرر کرنے کا کہہ دیا ہے لہذا یہ بتائیں کہ کس قانون کے تحت پارٹی کی رجسٹریشن منسوخ کرنے کا حکم دیا جائے۔ عدالت نے دلائل سننے کے بعد عوامی تحریک کی درخواست کے قابل سماعت ہونے پر فیصلہ محفوظ کر لیا۔