12-04-2018

پشاور ہائی کورٹ نے مشہور قوال امجد صابری قتل سمیت دیگر مقدمات میں سزائے موت پانے والے ملزم کی سزا پر عمل درآمد روکتے ہوئے دائر  اپیل پر وفاقی حکومت سے جواب طلب کرلیا ہے۔

جسٹس قلندرعلی خان اور جسٹس اشتیاق احمد  پر مشتمل پشاور ہائی کورٹ کے دورکنی بنچ نے  ملزم حضرت علی کی جانب سے دائر  اپیل کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ ملزم کو کرک سے گرفتار کرلیا گیا تھا اور اپریل 2018کو انہیں قوال امجد صابری سمیت دیگر کو قتل کرنے کے الزام میں ملٹری کورٹ نے سزائے موت سنادی تاہم جس وقت ملزم گرفتار ہوئے تھے اس وقت ان کی عمر اٹھارہ سال تھی اور انہیں سزا دینے سے قبل عدالت میں اپنی صفائی کا موقع نہیں دیا گیا تھا لہٰذا ملزم کو اپنی صفائی کا موقع دیا جائے اور ان کی سزا روکی جائے۔ عدالت نے دائر اپیل پر ابتدائی سماعت کے بعد اپیل کنندہ کی سزا پر عملدرآمد روک دیا اس اس ضمن میں وفاقی حکومت سے جواب طلب کرلیا۔