27-07-2017

چیف جسٹس  پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار  نے ملتان میں پنچایت کے حکم پر 17 سالہ لڑکی سے ریپ کے واقعے کا از خود نوٹس لیتے ہوئے انسپکٹر جنرل پنجاب پولیس سے واقعے پر رپورٹ طلب کرلی ہے۔

ترجمان سپریم کورٹ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق گذشتہ روز میڈیا نے ایک واقعہ رپورٹ کیا تھا کہ وسطی پنجاب کے شہر ملتان میں ایک 12 سالہ لڑکی کے مبینہ ریپ کے بعد ایک پنچایت نے مبینہ ملزم کی 17 سالہ بہن کے ریپ کا حکم جاری کیا۔میڈیا رپورٹس میں کہا گیا کہ 20 اراکین پر مشتمل پنچایت نے کم عمر لڑکی سے زیادتی کا حکم دیا تھا، 20 رکنی پنچایت میں 4 خواتین بھی شامل تھیں۔

 ترجمان سپریم کورٹ کے مطابق چیف جسٹس پاکستان  نے میڈیا پر نشر ہونے والی ان رپورٹس کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب سے واقعے کی رپورٹ 24 گھنٹے میں سپریم کورٹ میں پیش کرنے کا حکم دے دیا