07-04-2017

لاہور ہائی کورٹ نے من پسند نجی ٹی وی چینلوں کو اشتہارات دینے کے الزام سے متعلق درخواست پر وفاقی اور صوبائی حکومتوں سمیت سرکاری اداروں سے جواب طلب کر لیا ہے ۔

چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ جسٹس منصور علی شاہ پر مشتمل بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ ٹی وی چینلز کو سرکاری اشتہارات کی تقسیم اور ان کے ریٹس طے کرنے کے حوالے سے کوئی پالیسی ہی موجود نہیں جبکہ حکومت نےمن پسند چینلز کو  سال دو ہزار تیرہ سے دسمبر دو ہزار سولہ کے درمیانی عرصہ میں گیارہ ارب روپے کے سرکاری اشتہارات قانونی ضابطے پر عمل کئے بغیر دیئے ۔

عدالت نے اخبارات اور ٹی وی چینلز کو سال دو ہزار سولہ میں تقسیم کئے گئے سرکاری اشتہارات کے بجٹ کا ریکارڈ  عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیتے ہوئے درخواست پر مزید سماعت چودہ اپریل تک ملتوی کردی ۔