03-03-2017

پشاور ہائی کور ٹ نے میل نرس کی آسامیوں کےلئے پبلک سروس کمیشن کے امتحان میں پیش ہونے والے امیدواروں کو میرٹ لسٹ میں شامل کرنے کےلئے دائر رٹ درخواست پر صوبائی حکومت اور سیکرٹڑی صحت سمیت متعلقہ حکام کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا ہے ۔

جسٹس قیصر رشید کی سربراہی میں پشاور ہائی کورٹ کے دو رکنی بنچ نے دس میل نرسز کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ درخواست گزاروں نے خیبر پختونخوا کے مختلف سرکاری ہسپتالوں میں میل نرسز کی آسامیاں مشتہر ہونے پر درخواستیں دیں اور پبلک سروس کمیشن کاامتحان دیا جنہوں نے سفارشات مرتب کیں تاہم اس دوران صوبائی حکومت نے تین سو چون میل و فی میل ایڈہاک نرسوں کو مستقل کیا اور مستقل ہونے والے اہڈہاک نرسوں میں بیانوے وہ امیدوار بھی تھے جو پبلک سروس کمیشن کے امتحان میں پیش ہوئے تھے اور اس طرح پبلک سروس کمیشن کی میرٹ لسٹ میں باقی ماندہ امیدواروں کو شامل کرنا چاہیے تھا اور میرٹ لسٹ پر نظرثانی کی جانی چاہیے تھی تاہم میرٹ لسٹ دوبارہ مرتب نہ ہو سکی حالانکہ اس حوالے سے متعلقہ محکموں کو متعدد بار درخواستیں بھی دی گئیں لیکن ان کی  کوئی شنوائی نہیں ہوئی لہذا دوبارہ میرٹ لسٹ مرتب کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں ۔