24-08-2017

لاہورہائی کورٹ کے جسٹس شاہد وحید نے میڈیکل انٹری ٹیسٹ نتائج روکنے کا حکم جاری کر دیا ہے ۔

دائر رٹ درخواست میں  درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ میڈیکل انٹری ٹیسٹ کے پیپرز لیک ہوچکے ہیں لہذا انٹری ٹیسٹ نتائج کو کالعدم قراردیا جائے۔ جس پر لاہور ہائی کورٹ نے حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے  پنجاب حکومت اور یونیورسٹی ہیلتھ سائنسز سے 27 اگست تک جواب طلب کر لیا۔