07-04-2018

پشاورہائی کورٹ نے میڈیکل کی طالبہ عاصمہ رانی کے قتل میں ملوث ملزمان کی درخواست ضمانت سماعت کے لئے کوہاٹ سے پشاورکی انسداددہشت گردی کی عدالت منتقل کرنے کے احکامات جاری کردئیے ہیں۔

قائمقام چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس وقاراحمدسیٹھ  پر مشتمل بنچ نے مقتولہ عاصمہ رانی کے بھائی محمد عرفان کی جانب سے دائررٹ پٹیشن کی سماعت کی۔ جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ عاصمہ رانی کے قتل کے الزام میں گرفتار ملزم مجاہد آفریدی اور  شاہ زیب کا تعلق بااثر خاندان سے ہے اوراسی بناء عاصمہ رانی کیس لڑنے کیلئے کوئی وکیل تیار نہیں۔ عاصمہ رانی کے فیملی والوں نے کوشش کی لیکن کوہاٹ کا کوئی وکیل ان کا کیس لڑنے کیلئے تیار نہیں۔ لہذا عدالت سے استدعا کی جاتی ہے کہ عاصمہ رانی قتل کیس کے ملزمان کی درخواست ضمانت کو انسداد دہشتگردی عدالت کوہاٹ سے انسداد دہشت گردی عدالت پشاور منتقل کی جائے۔