26-07-2017

ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج پشاور نے نجی سکول میں قحبہ خانہ چلانے اور طلبہ سے مبینہ جنسی زیادتی کے الزام میں گرفتار نجی سکول کے پرنسپل کی ضمانت درخواست پر متعلقہ تھانہ سے ریکارڈ طلب کرکے درخواست پر سماعت کل جمعرات تک ملتوی کردی ہے ۔

استعاثہ کے مطابق ملزم عطاء اللہ مروت پر الزام ہے کہ اس نے اپنے حیات آباد میں واقع نجی سکول میں خواتین کو لاکر جنسی تشدد کا نشانہ بناتا ہے جبکہ کمسن طلباء کے ساتھ بھی جنسی زیادتی کے ساتھ ویڈیوز بنا کر بلیک میل کرنے کی کوشش کی جس پر ایک طالب علم کی شکایت پر تھانہ حیات آباد پولیس نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کرکے گرفتار کیا ہےجبکہ ملزم نے جیل منتقلی کے بعد ضمانت پر رہائی کےلئے درخواست دائر کی اور عدالت نے متعلقہ تھانہ سے ریکارڈ طلب کرکے سماعت ستائیس جولائی تک ملتوی کردی ۔