17-02-2017

لاہور ہائی کورٹ کے جسٹس شاہد جمیل پر مشتمل بنچ نے نجی میڈیکل کالجوں میں بھاری فیسوں اور میرٹ کے برعکس داخلوں کے روک تھام کے لئے سیکرٹری سپیشلائزڈ ہیلتھ کئیر ،وائس چانسلر یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز اور صدر پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل کو مشترکہ اجلاس طلب کر کے لائحہ عمل مرتب کرنے کا حکم دے دیا ہے۔

 فاضل عدالت نے اس سلسلے میں آئندہ تاریخ سماعت پر اجلاس کی تفصیلی رپورٹ بھی طلب کرلی ہے۔ دائر رٹ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ نجی میڈیکل کالجز میں میرٹ پر پورا اترنے والے طالب علموں کوداخلے دینے کی بجائے میرٹ کے برعکس بھاری فیسیں دینے والے طلباءکو داخلے دے دئیے گئے جبکہ میرٹ کی پالیسی پر عمل نہ ہونے سے طبی تعلیم کے دروازے ذہین طلباءکے لئے بند ہو گئے ہیں۔