09-03-2017

پشاور ہائی کورٹ نے پشاور کے نجی میڈیکل کالج کے فیل قرار دیئے جانے والے طالب علموں سے دو سال کی ایڈوانس فیس وصول کرکے واپس نہ کرنے کے خلاف دائر رٹ پر خیبرمیڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر کو انکوائری آفسر مقرر کرتے ہوئے تحقیقات مکمل کرکے رپورٹ رجسٹرار پشاور ہائی کورٹ کے حوالے کرنے کے احکامات جاری کر دیئے ہیں ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ پشاور کے نجی میڈیکل کالج نے درخواست گزار سے سال اول اور دوم کی تمام فیسیں ایڈوانس وصول کی تاہم درخواست گزار سال اول میں ناکام رہا لیکن اب وہ فیس واپس نہیں کر رہے جو کہ غیر قانونی اقدام ہے ۔