26-09-2017

احتساب عدالت اسلام آباد  نے نیب ریفرنس میں سپریم کورٹ سے نااہل کئے گئے سابق وزیر اعظم میاں نوازشریف پر فرد جرم عائد کرنے کیلئے 2 اکتوبر کی تاریخ مقرر کر دی جبکہ عدم پیشی پر سابق وزیراعظم کے بچوں اور داماد کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے 10، 10 لاکھ روپے کے مچلکے جمع کرانے کا حکم دے دیا ہے۔

 سماعت کے دوران خواجہ حارث نے سابق وزیراعظم کو سکیورٹی خدشات کے باعث حاضری سے استثنیٰ کی درخواست دائر کی جسے عدالت نے مسترد کر دیا اور فرد جرم کیلئے آئندہ سماعت پر دوبارہ پیش ہونے کا حکم دیا۔

عدالتی استفسار پربتایا گیا کہ دیگر ملزمان بیرون ملک ہونے کے باعث پیش نہیں ہوسکے، جس پرعدالت نے حسن، حسین، مریم اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے انہیں 10،10 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دیا۔

واضح رہے احتساب عدالت نے العزیزیہ سٹیل مل، فلیگ شپ انویسٹمنٹ اور لندن فلیٹس ریفرنسز میں نواز شریف، حسن نواز، حسین نواز، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو طلب کر رکھا تھا۔