16-08-2017

سندھ ہائی کورٹ نے قومی احتساب بیورو کو اراکین سندھ اسمبلی اور بیورو کریٹس کے خلاف انکوائری جاری رکھنے کا حکم دیا ہے۔

چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ جسٹس احمد علی شیخ کی سربراہی میں 2 رکنی بینچ نے سندھ حکومت کی جانب سے صوبے میں نیب کا اختیار ختم کرنے سے متعلق دائر درخواست کی سماعت کی۔جس میں  الزام عائد کیا گیا  کہ پیپلزپارٹی کے وزرا اور مشیر کرپشن میں ملوث ہیں اس لئے سندھ میں نیب آرڈیننس کو کالعدم قرار دیا گیا ہے اس لئے اس فیصلے کا کالعدم قرار دیا جائے۔

سماعت کے دوران عدالت نے قرار دیا کہ جن اراکین سندھ اسمبلی کے خلاف نیب میں انکوائری جاری ہے ان کی فہرست پیش کی جائے اور ان اراکین اسمبلی کی بھی فہرست فراہم کی جائے جنہوں نے بل کی منظوری میں ووٹ دیا۔ عدالت نے کیس کی سماعت 22 اگست تک کے لئے ملتوی کردی۔