24-05-2018

سپریم کورٹ نے قرار دیا ہے کہ ملک میں بادشاہت نہیں، وزیراعظم ریاست کی جائیداد کا مالک نہیں ہوسکتا۔

جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے تین رکنی بنچ نے سوکس سینٹرز بلڈنگ ویلتھ ٹیکس ادائیگی کیس کی سماعت  کرتے ہوئے سوکس سنٹرز کی اپیلیں منظور  کرکے اسلام آباد ہائی کورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دے دیا۔

ایف بی آر کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ سابق وزیر اعظم کے حکم سے 1995 میں دو سرکاری عمارتیں 198 ملین میں سوکس سنٹر کو فروخت کی گئیں، سوکس سنٹرز نے انکم ٹیکس تو دیا لیکن ویلتھ ٹیکس ادا نہیں کیا، سرکاری جائیداد کو وزیر اعظم نے دوسرے حکومتی ادارے کو فروخت کیا، یہ جائیداد کسی نجی فرد کو فروخت نہیں ہوئی۔

سپریم کورٹ کے جسٹس گلزار احمد نے قرار دیا کہ کس قانون کے تحت وزیر اعظم سرکاری جائیداد کسی کو ٹرانسفر کر سکتا ہے؟وزیر اعظم ریاست کی جائیداد کا مالک نہیں ہو سکتا، ملک میں بادشاہت نہیں ہے۔