14-11-2017

احتساب عدالت نے کی جانب سے وزیر خزانہ اسحٰق ڈار کے خلاف آمدنی سے زائد اثاثے بنانے کے الزام میں دائر ریفرنس کی سماعت کے دوران اسحٰق ڈار کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیئے ہیں۔

عدالت کی کارروائی آج صبح 9 بجے شروع ہوئی تو اسحٰق ڈار کے وکیل نے عدالت سے سماعت کو 12 بجے تک ملتوی کرنے کی درخواست کی جبکہ نیب کی جانب سے تفتیشی افسر بھی عدالت میں مقررہ وقت پر نہیں پہنچ سکے تھے۔اس موقع پر وزیر خزانہ اسحٰق ڈار کے ضامن احمد علی قدوسی بھی عدالت میں پیش موجود تھے۔

احتساب عدالت کے جج محمد بشیر کی جانب سے اسحٰق ڈار کی پیشی کے حوالے سے سوال کا جواب دیتے ہوئے احمد علی قدوسی کا کہنا تھا کہ اسحٰق ڈار کو مکمل صحت یابی میں 3 سے 6 ہفتے لگ سکتے ہیں۔بعد میں عدالت نے کارروائی کا دوبارہ آغاز کیا تو اسحٰق ڈار پر آمدنی سے زائد اثاثے رکھنے کے کیس میں ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کرتے ہوئے سماعت کو 21 نومبر تک کے لیے ملتوی کردیا۔