28-03-2017

لاہور ہائی کورٹ نے وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار کو ضمنی بجٹ کا اختیار دینے کیخلاف دائر درخواست پر وفاقی حکومت سے جواب طلب کر لیا ہے۔

دائر رٹ درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا ہے کہ حکومت نےکسی قانونی جواز کے بغیر وزیر خزانہ کو 100ملین کا ضمنی بجٹ لاگو کرنے کا اختیار دیا ہے جبکہ وزیر خزانہ کی جانب سے ضمنی بجٹ کو کابینہ سے منظور نہیں کرایا گیا جو کہ سپریم کورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی ہے۔ حالانکہ سپریم کورٹ کے احکامات کے تحت تمام معاملات میں کابینہ کی منظوری لازم ہے اسلئے حکومت کے اس فیصلے کو کالعدم قرار دیا جائے۔

عدالت نے دلائل سننے کے بعد وزیراعظم پاکستان سے پرنسپل سیکرٹری کے ذریعے اور وزیرخزانہ سے جواب طلب کرتے ہوئے سماعت 17اپریل تک ملتوی کر دی۔