05-06-2017

وفاقی حکومت نے پرائمری سے لے کر یونیورسٹی تک قرآن پاک کی تجوید کے ساتھ تعلیم کو لازمی قرار دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

 رپورٹس کے مطابق وفاقی  وزارت مذہبی امور و بین المذاہب ہم آہنگی کی جانب سے پرائمری سے لے کر یونیورسٹی کی سطح تک قرآن پاک کی تجوید کے ساتھ تعلیم کو لازمی قرار دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزارتِ مذہبی امور کی جانب سے قرآن ریسرچ اکیڈمی کے ساتھ وفاقی سطح پر قرآن کمپلیکس قائم کرنے کا فیصلہ بھی کیا  گیا ہے۔ وزارت  مذہبی امور  کے مطابق وزارت نے قرآن پاک کی تعلیم کو لازم کرنے کے لیے بل تیار کرلیا ہے جسے ایوان سے منظور کروایا جائے گا۔

سفارشات کے مطابق تعلیمی اداروں میں موجود مسلم طلبا کو قرآن پاک کی تعلیم لازمی دی جائے اور تمام اسکول انتظامیہ کو اس بات پر پابند کیا جائے کہ آدھے گھنٹے کا وقت قرآن مجید کی تعلیم کے لیے مختص کیا جائے، طلباء کو تجوید کے ساتھ قرآن مجید کی تعلیم دینے کےلیے ماہر قاری حضرات کی خدمات حاصل کی جائیں۔