08-05-2017

پشاور ہائی کورٹ نے صوبائی حکومت کی جانب سے خیبر پختونخوا کے وکلاء پرسیلز ٹیکس عائد کرنے کے خلاف دائر رٹ درخواست پر سماعت کرتے ہوئے آئندہ پیشی پر ایڈوکیٹ جنرل خیبر پختونخوا کو عدالتی معاونت کے لئے طلب کر لیا ہے ۔

خیبر پختونخوا بار کونسل کی جانب سے دائر رٹ درخواست میں عدالت کوبتایا گیا کہ صوبائی حکومت صوبہ کے وکلاء پر سیلز ٹیکس عائد کر رہی ہے حالانکہ صوبہ خیبر پختونخوا میں وکلاء پہلے ہی دہشت گردی اور ٹارگٹ کلنگ سے متاثرہیں جبکہ وکلاء برادری پہلے ہی پروفیشنل ٹیکس ادا کر رہی ہے لہذا صوبائی حکومت کے اس اقدام کو کالعدم قرار دیا جائے ۔

فاضل عدالت نے وکلاء پر سیلز ٹیکس عائد کرنے سے متعلق ایڈوکیٹ جنرل خیبر پختونخوا کو آئندہ پیشی پر عدالتی معاونت کےلئے طلب کر لیا اور سماعت ملتوی کر دی ۔