30-06-2017

پشاور ہائی کورٹ نے ٹاون میں عدالتی احکامات کے باوجود کمرشل سرگرمیوں کے خلاف دائر توہین عدالت کی درخواست نمٹا دی ہے۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اور جسٹس شکیل احمد پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر توہین عدالت درخواست کی سماعت کی جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ عدالت نے رہائشی علاقہ ٹاون میں کمرشل سرگرمیوں پر پابندی عائد کررکھی ہے تاہم اس کے باوجود ٹاون میں کمرشل سرگرمیاں جاری ہیں لہذا سیکرٹری لوکل گورنمنٹ ، ایس ایچ او ٹاون اور ٹی ایم او ٹاون تھری کے خلاف توہین عدالت کی کاروائی عمل میں لائی جائے ۔

فاضل عدالت نے درخواست نمٹاتے ہوئے قرار دیا کہ اس حوالے سے عدالت عالیہ پہلے ہی فیصلہ دے چکی ہے اور صوبائی حکومت کے پاس یہ اختیار ہے کہ وہ ٹاون میں کمرشل سرگرمیاں جاری رکھے کیونکہ اس حوالے سے باقاعدہ قانون سازی ہو چکی ہے جبکہ ٹاون میں جو کمرشل ادارے سربمہر کئے گئے ہیں ان کی بحالی کےلئے صوبائی حکومت سے رجوع کیا جا سکتا ہے ۔