16-02-2017

سپریم کورٹ نے پاناما پیپرز کیس میں چیئرمین نیب اور چیئرمین ایف بی آر کو طلب کرلیا  اور  چیئرمین نیب اور چیئرمین ایف بی آر کو 21فروری کو ریکارڈ سمیت پیش ہونے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

جسٹس آصف سعید کھوسہ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کے پانچ رکنی لارجز بینچ نے پانامہ لیکس سے متعلق درخواستوں کی سماعت کی ۔

آج وزیر اعظم پاکستان میاں نواز شریف کےصاحبزادوں کے وکیل سلمان اکرم راجا نے دلائل مکمل کر لیے۔جسٹس آصف کھوسہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ چیئرمین ایف بی آر آئندہ سماعت پر بتائیں کہ پانامہ لیکس میں ابتک کیا کارروائی کی،کتنے افراد کو نوٹسز بھجوائے گئے ۔کیس سے متعلق تیاری کرکے آئیں ،ہم سوالات پوچھیں گے۔ عدالت نے آج کی سماعت مکمل ہونے پر پانامہ لیکس سے متعلق درخواستوں پر مزید سماعت منگل 21 فروری تک ملتوی کر دی ۔