20-03-2017

پاکستان انڈیا انڈس واٹرکمیشن کے مابین دو روزہ مذاکرات آج سے اسلام آباد میں شروع ہوگئے ہیں جس کے لیے انڈین انڈس واٹر کمشنر پی کے سکسینا کی سربراہی میں دس رکنی وفد واہگہ بارڈر راستے لاہور پہنچا تھا۔بیس اور 21 مارچ کو اسلام آباد میں ہونے والے ان مذاکرات میں پاکستانی وفد کی قیادت انڈس واٹر کمشنر مرزا آصف بیگ کریں گے ـ

 یاد رہے کہ پاکستان اور انڈیا میں سندھ طاس معاہدہ 1960 میں طے پایا تھا، جس کے تحت بیاس، راوی اور ستلج کا پانی انڈیا کو مل گیا جبکہ دریائے چناب ،جہلم اور سندھ پاکستان کے حصے میں آئے۔ اس معاہدے کے تحت ہر سال دونوں ملکوں کا ایک اجلاس ہونا لازمی ہے تاکہ متازع معاملات مل بیٹھ کر طے ہو سکیں۔