21-05-2018

خیبر پختونخوا حکومت نے پاکستان کی پہلی چائلڈ لیبر پالیسی ترتیب دے دی جس کے تحت صوبے میں چائلڈ اینڈ بائونڈڈ لیبر یونٹ قائم کیا جائے گا جو صوبے میں موجود محنت کش بچوں کا ریکارڈ مرتب کرے گا۔

حکام کے مطابق  چائلڈ لیبر کے خاتمے کیلئے سنٹرل ریفرل مکینزم قائم کیا جائے گا جو دیگر محکموں کے ساتھ مل کر صوبہ بھر میں ایسے مقامات کارروائی کرے گا جہاں پر بچوں سے مشقت کروائی جاتی ہے ۔

محکمہ محنت خیبر پختونخوا کی جانب سے تیار کی جانے والی چائلڈ لیبر پالیسی کے مسودے میں کہا گیا ہے کہ موثرکارروائی کرنے کیلئے سنٹرل ریفرل مکینزم کے نام سے موثر پینل تشکیل دیا جائے جبکہ کمیونٹی کی سطح پر چائلڈ لیبر کے خاتمے کیلئے مانیٹرنگ اور رپورٹنگ سسٹم متعارف کرایا جائے گا۔ چائلڈ لیبر کا ریکارڈ رکھنے کی ذمہ داری چائلڈ اینڈ باونڈڈ لیبر یونٹ کی ہو گی ۔پالیسی کا مقصد خیبر پختونخوا کو بچوں کی مشقت سے پاک صوبہ بنانا اورتمام بچوں کو سکول میں داخل کروانا اور تعلیم دلوانا ہے ۔