22-03-2017

پشاور ہائی کورٹ نے پاک افغان اتحاد بس سروس کی بندش کے خلاف دائر رٹ درخواست پر فیڈرل سیکرٹری کمیونی کیشن اور سیکرٹری سیفران کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا ہے ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ  جسٹس یحیی آفریدی اور جسٹس اکرام اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے پاک افغان اتحاد بس سروس کی جانب سے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایا گیا کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان بس سروس شروع کی گئی تھی جس کے باعث عوام کو زیادہ فائدہ تھا لیکن اس بس سروس کو وزارت داخلہ نے  ایک سے سال سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے کہ بند کر رکھی ہے جس سے دنوں ملکوں کے عوام کو مشکلات کا سامنا کر نا پڑرہا ہے لہذا بس سروس کی بحالی کے احکامات جاری کئے جائیں ۔

عدالت کوبتایا گیا کہ اس ضمن میں صوبائی حکومت نے اپنا جواب داخل کر دیا ہے تاہم وفاق سے ابھی تک جواب موصول نہیں ہوا ہے جس پر عدالت نے فیڈرل سیکرٹری کمیونی کیشن اور سیکرٹری سیفران کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کر لیا۔