28-02-2017

پشاور ہائی کورٹ نے پاک ترک سکول میں تعینات ترک عملے کی بے دخلی کے خلاف رٹ واپس لینے پر نمٹا تے ہوئے نئی رٹ دائر کرنے کی اجازت دے دی ہے ۔

جسٹس سید افسر شاہ اور جسٹس یونس تہیم پر مشتمل دو رکنی بنچ نے پاک ترک طلباء اور اساتذہ کی جانب سے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی ۔درخواست گزاروں کے وکیل نے موقف اپنایا کہ وہ رٹ میں ترمیم کرنا چاہتے ہیں کیوں کہ پاک ترک سکول میں تعینات جن اساتذہ کو ترکی واپس بلایا گیا ہے اگر وہ واپس جائیں گے تو وہاں ان کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑے گا  اسی بناء پر ترک عملے نے یو این ایچ سی آر کو سیاسی پناہ کی درخواست دے رکھی تھی اور متعدد افراد کو یواین ایچ سی آر کی جانب سے سیاسی پناہ کے سرٹیفیکٹس جاری ہو چکے ہیں ۔اس لئےدرخواست گزار ترمیمی رٹ لانا چاہتے ہیں اور اس میں پاکستان میں قیام کےلئےویزوں میں توسیع اور کم از کم چھ ماہ مزید قیام قانونی طور پر چاہتیں ہیں ۔

عدالت نے رٹ واپس لینے پر نمٹا دی اور درخواست گزاروں کو نئی رٹ دائر کرنے کی اجازت دے دی ۔