05-04-2017

پشاور ہائی کورٹ نے صوبائی حکومت کی جانب سے پرائمری سکولوں کے اساتذہ سے انسداد پولیو مہم کی ڈیوٹی لینے کے اقدام کے خلاف دائر رٹ درخواست پر درخواست گزاروں کے تقرر نامے عدالت میں پیش کرنے کے احکامات جاری کردیئے ہیں ۔

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اکرام  اللہ خان پر مشتمل دو رکنی بنچ نے ضلع صوابی کے پرائمری اساتذہ کی جانب سے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزار پرائمری ٹیچروں سے حال ہی میں حکومت نے انسداد پولیو مہم کی ڈیوٹی بھی لینا شروع کی ہے جس سے بچوں کی پڑھائی متاثر ہو رہی ہے حالانکہ قانون میں کہیں بھی یہ نہیں لکھا گیا کہ یہ اساتذہ انسداد پولیو کی ڈیوٹی دینے کے پابند ہوں گے ۔ عدالت کو بتایا گیا کہ جن اساتذہ نے انسداد پولیو مہم ڈیوٹی دینے سے انکار کیا ہے تو انہیں معطل بھی کیا گیا ہے اور اساتذہ سے زبردستی انسداد پولیو ڈیوٹی لینا غیر آئینی اور ان کے تقررنامے میں دیئے گئے شرائط کے منافی ہے ۔

عدالت نے ابتدائی دلائل کے بعد درخواست گزاروں کو ہدایت کی کہ ان اساتذہ کے تقررنامے عدالت میں پیش کئے جائیں اور رٹ پر مزید سماعت اگلی تاریخ تک ملتوی کردی