23-08-2017

پشاور ہائی کورٹ  نے پشاور میں ڈینگی کے مرض میں اضافے کے خلاف دائر رٹ پر متعلقہ حکام سے صوبائی حکومت کے اقدامات کی تفصیلات طلب کر لی ہیں۔

جسٹس محمد ابراہیم خان اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ پشاور میں ڈینگی کی وباء بتدریج بڑھ رہا ہے جبکہ دوسری جانب یونیورسٹی روڑ پر کھدائی کے باعث پانی کے جوہڑ بنے ہیں اور صوبائی حکومت کی جانب سے ڈینگی کے تدارک اور بچاو کےلئے کوئی اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں۔ لہذا صوبائی وزیر صحت اور سیکرٹری صحت کو کام سے روک کر ان کی تنخواہیں قرق کی جائیں۔

فاضل عدالت نے رٹ کی سماعت چوبیس اگست تک ملتوی کرتےہوئے ڈینگی کی روک تھام کے لئے اب تک کئے جانے والے صوبائی حکومت کے اقدامات کی تفصیلات طلب کرلی ۔