12-06-2017

پشاورہائی کورٹ نے نیب خیبر پختونخوا کو پشاور ٹاون کونسل ٹو کے سابق ناظم محمد شریف کی گرفتاری سے روکتے ہوئے ڈی جی نیب سے جواب طلب کر لیا ہے ۔

جسٹس لعل جان خٹک اور جسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں عدالت کو بتایاگیا کہ نیب نے درخواست گزار کو نوٹس جاری کیا ہے کہ اس کے خلاف غیر قانونی اثاثوں سے متعلق انکوائری جاری ہے جبکہ اثاثوں سے متعلق پروفارما داخل نہ کرنے کی صورت میں درخواست گزار کو گرفتار کر لیا جائے گا۔

رٹ میں موقف اپنا یا گیا کہ درخواست گزار نیب کو اثاثوں کی تفصیلات پیش کرنے کا پابند نہیں کیوں کہ نیب آرڈینینس کی شق انیس کے تحت نیب کی ذمہ داری ہے کہ وہ درخواست گزار کے خلاف گواہ پیش کرے گا۔ لہذا نیب کے نوٹس کو کالعدم قرار دیا جائے ۔