12-10-2017

پشاور ہائی کورٹ نے پشاور کے شہریوں کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے لئے دائر رٹ درخواست پر پی سی ایس آئی آر کے ڈائریکٹر کو عدالت طلب کرلیا ہے اور حکم دیا ہے کہ شہر اور صدر کے مختلف علاقوں کے پانی نمونے حاصل کرکے اس کا تجزیہ کرنے کے بعد رپورٹ عدالت میں پیش کی جائے ۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ کی سربراہی میں قائم دو رکنی بنچ نے دائر رٹ درخواست کی سماعت کی جس میں موقف اپنایا گیا کہ پشاور میں عوام کو پینے کا آلودہ پانی فراہم کیا جا رہا ہے کیونکہ زیر زمین پائپ لائن زنگ آلود اور بوسیدہ ہو چکے ہیں جو جگہ جگہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہیں اور یہ پائپ نالیوں میں گزرنے کے باعث گندہ پانی پائپوں میں جا رہا ہے جس سے مختلف امراض پھیل رہے ہیں لہذا فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ پشاور کے شہریوں کو پینے کے صاف پانی کی فراہمی کے احکامات جاری کئے جائیں۔