04-10-2017

پشاور ہائی کورٹ نے نیب سے پلی بارگین کرنے والے سابق مشیر وزیر اعلی خیبر پختونخوا سید معصوم شاہ سے وصول کی جانے والی اضافی رقم واپس کرنے اور اس کا نام ای سی ایل سے ہٹانے کے احکامات جاری کردیئے ہیں۔

جسٹس وقار احمد سیٹھ اور جسٹس یونس تہیم پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر رٹ پٹیشن کی سماعت کی جس میں عدالت کوبتایا گیا کہ درخواست گزار سابق مشیر وزیر اعلی خیبر پختونخوا سید معصوم شاہ نے پچیس کروڑ ستاسی لاکھ روپے کے عوض نیب کے ساتھ پلی بارگین کیا تھا اور انیب نے اس میں تین کروڑ تینتیس لاکھ روپے انسی ڈینٹل چارجز شامل کئے جبکہ ان کا نام تاحال ای سی ایل میں موجود ہے لہذا فاضل عدالت سے استدعا ہے کہ ان کا نام ای سی ایل سے نکالا جائے اور اضافی رقم کی واپس کرنے کے احکامات جاری کئے جائیں۔