16-11-2017

پشاور ہائی کورٹ نے پاکستان میڈیکل اینڈ ڈینٹل کونسل کو جناح میڈیکل کالج کے خلاف کاروائی سے روک دیا اور پی ایم ڈی سی  اور وفاق سے جواب طلب کرلیا ہے

چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس اعجاز انور پر مشتمل دو رکنی بنچ نے دائر ر ٹ درخواست کی سماعت کی جس میں موقف اپنایا گیا کہ جناح میڈیکل کالج نے پی ایم ڈی سی کو درخواست دی کہ کالج کی پچاس نشستیں ہیں ان کو دوگنا کرکے سو کی جائے اور بعد میں انسپکشن ٹیم نے بعض خامیوں کی نشاندہی کر کے کمی پوری کرنے کی ہدایت کی اور چھ ماہ کی مہلت دی تاہم پی ایم ڈی سی ایگزیکٹو کونسل نے نشستوں میں اضافہ کی بجائے کالج کی رجسٹریشن منسوخ کرنے کی سفارش کر دی جو کہ غیر قانونی ، غیر آئینی اقدام ہے لہذا اسے کالعدم قرار دیا جائے۔عدالت نے نجی میڈیکل کالج کے خلاف کاروائی روکتے ہوئے متعلقہ حکام کو نوٹس جاری کرکے جواب طلب کرلیا۔