26-01-2017

پشاور ہائی کورٹ نے پی ٹی سی فنڈز میں کروڑوں روپے غبن کرنے کے الزام میں گرفتار ڈی ای او آفس پشاور کے اکاونٹنٹ اصغر علی کی ضمانت پر رہائی کے احکامات جاری کردیئے ہیں ۔

ملزم کے وکیل نے فاضل عدالت میں موقف اپنایا کہ ملزم پر الزام ہے کہ اس نے سکولوں کےلئے مختص پی ٹی سی فنڈز میں کروڑوں روپے غبن کئے اور اس میں محکمہ تعلیم کی خاتون آفیسر بھی شریک ملزم ہیں حالانکہ نیب نے اس حوالے سے تمام انکوائری ماروائے آئین کی ہے کیونکہ قانون کے تحت پہلے انکوائری ہوگی اور پھر اگر تفتیش ہوتی ہے تو ملزم کو گرفتار کیا جا تا ہے تاہم موجودہ کیس صورتحال بالکل اس کے برعکس ہے اور ملزم کی گرفتاری کے بعد تحقیقات میں نیب نے دعوی کیا ہے کہ ملزم نے غبن کیا ہے جو کہ درست نہیں اس کے علاوہ نیب  یہ بھی ثابت نہ کر سکی کہ ملزم اکاونٹنٹ کے پوسٹ پر کام کر رہا ہے لہذا ملزم کی ضمانت درخواست منظور کی جائے ۔عدالت نے نیب اور وکیل صفائی کے دلائل مکمل ہونے پر ملزم کی بیس لاکھ روپے دو نفری ضمانت پر رہائی کا حکم دیا۔